Skip to main content
مینیو

فٹبالر سے بیکر بننے کا سفر

فٹبالر سے بیکر بننے کا سفر

یورپ میں پیشہ ور فٹبالر بننے کا میرا خواب غیر حقیقی تھا۔ اب گھانا میں میری خود کی بیکری ہے اور میں اپنا اچھے سے خیال رکھ سکتا ہوں۔

مزید پڑھیں

اپنے خاندان سے دوبارہ ملاپ

اپنے خاندان سے دوبارہ ملاپ

میں اپنی زندگی میں آگے بڑھنے کیلیے جرمنی گیا۔ جانیں کہ میں  اربیل میں دوبارہ کیوں رہائش پذیر ہوں اور میں واپس کیسے آیا؟

مزید پڑھیں

میری اپنی آئی ٹی کمپنی

میری اپنی آئی ٹی کمپنی

ایسی کمپنی شروع کرنا جو انٹرنیٹ مارکیٹنگ پر زور دیتی ہو اُس نے انہیں اُمید دلائی:جرمنی سے سربیا لوٹنے کے بعد امیلیانو نے اپنا نیا مستقبل بنایا۔ آج وہ اپنے کاروبار کو بڑھانے اور کئی نئے ملازمین کو نوکریوں پر رکھنے پر غور کررہا ہے۔

مزید پڑھیں

بالآخر میں اپنے پاؤں پر خود کھڑا ہوگیا

بالآخر میں اپنے پاؤں پر خود کھڑا ہوگیا

میرا نام غفار ہے۔ میری عمر35 سال اور تعلق افغانستان سے ہے۔میں2014 میں جرمنی گیا کیونکہ مجھے علاج کرانا تھا اور یہ افغانستان میں ممکن نہیں تھا۔ میں تنہا جرمنی پہنچا اور پناہ کیلیے درخواست دے دی۔ میرے گھر والے افغانستان میں ہی تھے۔

مزید پڑھیں

غیریقینی صورتحال کا خاتمہ

غیریقینی صورتحال کا خاتمہ

میرا نام ناں ہے؛میں29سال کی ہوں اور گھانا سے آئی ہوں۔میں بطور ایونٹ منیجر کام کرتی تھی۔2015 میں ڈویلپمنٹ اکنامکس اینڈ انٹرنیشنل اسٹڈیز کے ماسٹر ڈگری پروگرام کیلیے جرمنی گئی۔لیکن یہ آغاز میں ہی واضح تھا کہ اختتام پر مجھے واپس لوٹنا ہوگا۔میں ترقی میں اپنے ملک کی مدد کرنا چاہتی تھی۔ساتھ ہی ساتھ میں غیریقینی کا شکار تھی کہ وہاں کسی طرح اپنا مستقبل بناسکتی ہوں۔

مزید پڑھیں

کامیابی کا گھن چکر

کامیابی کا گھن چکر

میرانام ابراہیما ہے۔میں49سال کا اور میرا تعلق ڈکار سے ہے۔ میں ایک ڈلیوری کمپنی کیلیے کام کرتا تھا لیکن وہاں مجھے کوئی مستقبل نظر آتا تھا تو2018 میں فرانس اور پھر وہاں سے جرمنی چلا گیا،جہاں میرے اہلخانہ تھے۔لیکن جرمنی میں میری شروعات میری سوچ سے یکسر مختلف تھی۔

مزید پڑھیں

اپنی دکان سے ایک نیا آغاز

اپنی دکان سے ایک نیا آغاز

میرا نام ڈیرک ہے؛میں گھانا سے آیا ہوں اورمیری عمر29 سال ہے۔میں نے کمپیوٹر سائنس میں تعلیم حاصل کی لیکن اپنے ملک میں نوکری نہ حاصل کرسکا۔ میں2014 میں بطور سیاح جرمنی آیا اور پھر وہیں رک گیا اور ریسٹورنٹ میں کام کرنے لگا۔لیکن میری زندگی ویسی نہیں تھی جیسے میں نے سوچی تھی۔

مزید پڑھیں

اپنے خاندان کے لیے بہتر مستقبل

اپنے خاندان کے لیے بہتر مستقبل

میرا نام عجیم ہے اور میں کوسووو سے آیا ہوں۔میں ماربل انڈسٹری میں کام کرتا تھا لیکن میری تنخواہ انتہائی کم تھی۔ جس سے گھر کا خرچ چلانا انتہائی مشکل ہوتا تھا۔تو2015 میں میں اپنی اہلیہ اور تین بچوں کے ساتھ جرمنی چلا آیا اور ہم نے پناہ کیلیے درخواست دے دی۔

مزید پڑھیں

تیونس کی مٹھائیاں

تیونس کی مٹھائیاں

تیونس سے مرحبا"۔ اس طرح سے ہم تیونس آنے والوں کو  سلام کرتے ہیں۔میرا نام سلیم ہے، تیونس کے دیگر شہریوں کی طرح میرا بھی خواب تھا کہ بیرون ملک رہوں۔میں اپنے کیریئر میں آگے بڑھنا چاہتا تھا لیکن بزنس ایڈمنسٹریشن کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد میں نے اپنا ذہن تبدیل کرلیا:میں تیونس میں ہی رہا۔

مزید پڑھیں

اربیل کا کامیاب حجام

اربیل کا کامیاب حجام

میرا نام بیسٹون ہے؛میں 32 سال کا ہوں اورمیں عراق کے شہر اربیل سے آیا ہوں۔ میں شادی شدہ اور 2 بچوں کا باپ ہوں۔ہم سب 2018 میں جرمنی گئے ،کیونکہ عراق میں ہمارے لیے حالات پہلے سے بدتر ہوگئے تھے لیکن جرمنی میں بھی ہمارے لیے زندگی اچھی نہ تھی۔آج ہم اربیل واپس آچکے ہیں اور میرا اچھا کیریئر ہے۔ اب میں ایک ہیئر ڈریسر ہوں۔

مزید پڑھیں

مراکش میں ایک خودمختار درزی کی دکان

مراکش میں ایک خودمختار درزی کی دکان

میرا نام سید ہے اور میں مراکش کے ضلع فیس میں پلابڑھا۔یہاں میں نے درزی کا کام سیکھا۔ مجھے لگا کہ دیگر جگہوں پر مواقع زیادہ ہوں گے،تو 2015 میں سب سے پہلے ترکی اور پھر یونان گیا۔آخری کار میں جرمنی پہنچا۔ اُسوقت میں میری عمر30سال تھی اور جرمنی میں کام کی تلاش کیلیے پُرامید تھا۔

مزید پڑھیں

گھانا میں مواقع کی تلاش

گھانا میں مواقع کی تلاش

کام کی تلاش میں گھانا کو  چھوڑنا؟ ہر کسی کو اس پر احتیاط سے غور کرنا چاہیے۔ ہمارے لیے یہاں پر تمام مواقع موجود ہیں۔

مزید پڑھیں

کوسووو میں ایک کامیاب کاروبار

کوسووو میں ایک کامیاب کاروبار

میرانام سدیجی بی،میری عمر38سال اور میرا تعلق کوسووو سے ہے۔میں ایک تجربہ کار درزن ہوں۔میں نے اوبلیک میں ایک چھوٹا سا کاروبار شروع کیا ہے کیونکہ میں نے جرمن حکومت کے ری اینٹی گریشن(معاشرے سے جوڑنا) کے پروگرام میں حصہ لیا ۔۔ چلیں شروع سے بات کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں

پریسٹینا کے لیے کیک

پریسٹینا کے لیے کیک

پریسٹینا کی جانب سے آداب! میں یوریسا ہوں۔ چند سال قبل میں اپنے اہلخانہ کے ساتھ جرمنی گئی۔ اُس وقت میں صرف17 برس کی تھی۔ہم وہاں نئی زندگی شروع کرنا چاہتے تھے لیکن ہماری پناہ کی درخواست مسترد کردی گئی ۔ تو ہم2016کے وسط میں اپنے آبائی ملک واپس لوٹ آئے۔

مزید پڑھیں

البانیہ میں نئی نوکری اور نئی خوشیاں

البانیہ میں نئی نوکری اور نئی خوشیاں

میرا نام ری الاف اور عمر 25سال ہے۔میں2018کے آغاز میں جرمنی گیا اور وہاں اپنا کیریئر شروع کرنا چاہتا تھا۔ لیکن5ماہ گزارنے کے بعد مجھے یہ احساس ہوا کہ بغیر قانونی حیثیت کہ یہ مشکل ہوگا۔تو اپنے وطن البانیا واپس آگیا۔اس کے بعد میرے لیے مواقعوں کے نئے دروازے کھل گئے۔جو ہوا وہ یہ تھا

مزید پڑھیں

بیکنگ کے ہنر میں مستقبل

بیکنگ کے ہنر میں مستقبل

میرا نام اگریتا ہے اور میں البانیہ سے آئی ہوں۔میں نے جرمنی 2016میں اپنے خاوند اور3 بچیوں کے ساتھ جرمنی ہجرت کی۔ہم کیا چاہتے تھے؟ ایک بہتر زندگی! درحقیقت یہ بہت اچھا رہا:میرے خاوند کو ویلڈنگ اور مجھے صفائی کا کام اور بچوں کو اسکول میں داخلہ ملا۔انہوں نے جلد ہی جرمن سیکھ لی۔ اس وقت تک ہم نے اپنے اہلخانہ، دوستوں اور البانیہ کے رسم و رواج کو بہت یاد کیا۔لہذا 2017 جنوری میں ہم واپس لوٹ گئے۔

مزید پڑھیں

میری کمپنی، میرا مستقبل

میری کمپنی، میرا مستقبل

میرا نام جیری ہے اور میں نائجیریا سے آیا ہوں۔2014 میں اسکالرشپ کی وجہ سے میں نے ایک سال برطانیہ میں انجینئرنگ کی تعلیم حاصل کی۔ اُس کے بعد مجھ پر یہ واضح ہوگیا:میں نائیجیریا واپس جانا چاہتا ہوں اور اپنے علم کو اپنے ملک میں استعمال کروں۔

مزید پڑھیں

سیفٹی اور اس کا خاندان

سیفٹی اور اس کا خاندان

میرا نام سیفٹ ہے اور میں سربیا سے آیا ہوں۔اپنے ملک میں طویل عرصے تک بطور مستری اور سجاوٹ والا کام کرنے کے بعد میں قسمت آزمانے جرمنی آیا ۔ اگرچہ یہاں نوکری کی تلاش انتہائی مشکل کام تھا۔ تو میں نے سربیا واپس جانے پر غور شروع کردیا ۔ جس کے بعد میرے لیے فیصلہ لیا گیا اور جرمن حکام نے مجھے ڈیپورٹ کردیا۔

مزید پڑھیں

اپنی کمپنی سے نئے مواقع

اپنی کمپنی سے نئے مواقع

میرا نام ساسا ہے۔میں نے وسطی سربیا کے شہرکروشیواتس میں جنم لیا اور جرمنی میں کئی سال گزارنے کے بعد میں اپنے گھر لوٹا۔اس دوران میں سربیا میں اپنی کمپنی کھولنے کے قابل ہوا،یہ وہ چیز تھی جس کا میں نے ہمیشہ سے خواب دیکھا تھا۔ لیکن میں نےکچھ مدد بھی لی۔ یہی میری کہانی ہے۔

 

مزید پڑھیں

مینیو پر اطمینان

مینیو پر اطمینان

میرا نام بلال ہے۔2015 میں معاشی مشکلات کے بعد میں نے عراق چھوڑا اور جرمنی چلا گیا۔ میں وہاں بہتر زندگی کی تلاش میں تھا۔میں 12 دن کے سفر کے بعد بغیر مناسب کھانے یا رہائش کے بعد جرمنی پہنچا ۔میری اُمیداپنی مشکلات کا حل تلاش کرنا تھا۔

مزید پڑھیں

مراکش کے قدرتی کاسمیٹکس

مراکش کے قدرتی کاسمیٹکس

میرا نام یاسین ہے اور میں مراکش سے آیا ہوں۔ میں نے ضلع فیس سے اسلامی تعلیم مکمل کی لیکن گریجویشن کے بعد نوکری حاصل نہیں کرسکا۔اُس کے بعد خوش قسمتی سے پروموشن آف رورل یوتھ امپلائمنٹ(پی ای جے) پراجیکٹ کی جانب سے تربیت حاصل کرنے میں کامیاب رہا۔

مزید پڑھیں

میرا اپنا گروسری سٹوری

میرا اپنا گروسری سٹوری

میرانام وسیم،عمر36سال اور تعلق تیونس سے ہے۔میں نے زندگی کے 15سال یورپ میں گزارے ہیں۔میرا خواب تھا وہاں اچھی نوکری اوراپنا خاندان شروع کرنا۔لیکن اس میں سے کچھ بھی نہیں ہوا۔ اب یہ تمام خوشیاں مجھے اپنے وطن تیونس میں مل گئیں۔اُس وقت میں نے یہ سوچا بھی نہ ہوگا کہ یہ ممکن ہے۔

مزید پڑھیں

تیونس کا شہد

تیونس کا شہد

سلام، میں خالد ہوں۔ میں 34 برس کا ہوں اور تیونس سے آیا ہوں۔ میرے خاندان کا پھلوں اور سبزیوں کا کاروبار ہے جہاں میں نے طویل عرصے تک کام کیا۔ یورپ میں رہنا میرا ہمیشہ سے خواب تھا ۔ 2008میں جب میں 24سال کا تھا میں نے یورپ کیلیے رخت سفر باندھا۔ آغاز میں، میں نے ایک سال اٹلی میں گزارا۔ جس کے بعد میں بذریعہ فرانس اور بیلجیئم جرمنی پہنچا ۔

مزید پڑھیں